دہشت گرد واقعہ
معلومات جو کہ۔۔۔

لبنان کا حزب اللہ کا مالی مربوط نظام

انعامات برائے انصاف ایسی معلومات کے لیے 10 ملین ڈالر تک کے انعام کی پیشکش کر رہا ہے جو لبنانی حزب اللہ کے مالی نظام کو خلل ڈالنے میں مدد دے۔ دہشت گرد تنظیمیں جیسا کہ حزب اللہ اپنے کام کو برقرار رکھنے اور بین الاقوامی سطح پر حملے کرنے کے لیے پیسوں اور مددگار مربوط نظاموں پر انحصار کرتی ہیں۔ حزب اللہ کو سالانہ تقریبا ایک بلین ڈالر ایران کی طرف سے براہ راست مالی مدد، بین الاقوامی کاروبار اور سرمایہ کاری، مربوط نظاموں کی طرف سے عطیات، بد عنوانی، پیسوں کے ذریعے دھوکہ زنی جیسے کاموں کے ذریعے ملتے ہیں۔ تنظیم ان پیسوں کو اپنے ضرر رساں کاموں کے لیے استعمال کرتی ہے جس میں اپنی فوج کے ارکان کو اسد کی آمریت کی مدد کے لیے شام بھیجنا؛ امریکہ میں کڑی نگرانی کرنا اور معلومات اکٹھی کرنا اور اپنے فوجی صلاحیتوں کو اس مقام تک لے جانا کہ حزب اللہ یہ دعوی کرتی ہے کہ اس کے پاس اپنے نشانے پر درستگی کے ساتھ حملے کرنے والے میزائل ہیں جیسی چیزیں شامل ہیں۔ ان دہشت گرد سرگرمیوں کو حزب اللہ کے بین الاقوامی مربوط نظاموں سے مالی مدد ملتی ہے جو کہ مالی معاون اور بُنیاد ہیں جو حزب اللہ کو زندہ رکھنے کے لیے ضروری ہیں۔

حزب اللہ کو بھاری مقدار میں ہتھیار، تربیت اور مالی مدد ایران کی طرف سے مہیا ہوتی ہے جس کو سٹیٹ کے سیکرٹری نے ایک دہشت گرد ریاست قرار دیا ہے۔ سٹیٹ ڈپارٹمنٹ نے حزب اللہ کو اکتوبر 1997 میں ایک غیر ملکی دہشت گرد تنظیم (ایف ٹی او) اور اکتوبر 2001 میں ای او 13224 کے تحت ایک خاص مقرر کیا گیا دہشت گرد (ایس ڈی جی ٹی) قرار دیا۔

انعامات ایسی معلومات کے لیے مہیا کیے جا سکتے ہیں جس سے شناخت اور خلل ڈالنے میں مدد ملے:

  • تنظیم یا اس کے اہم مالی معاون طریقہ کار کے لیے ایک اہم ذریعہ ہے؛
  • حزب اللہ کا ایک اہم واہب اور مالی معاون؛
  • مالی ادارے اور مبادلہ بینک جو کہ جان بوجھ کر حزب اللہ کی اہم کاروبار میں مدد کرتے ہیں؛
  • کاروبار اور سرمایہ کاریاں جن کا مالک حزب اللہ ہے یا اُن پر اختیار رکھتا ہے؛
  • ایسی کمپنیاں جو بین الاقوامی سطح پر دوہرے استعمال والی ٹیکنالوجی خریدتی ہیں اور
  • ایسے جرائم جن میں حزب اللہ کے اراکین اور معاون شامل ہیں جو کہ تنظیم کو مالی فائدہ پہنچا رہے ہیں۔

ان چیزوں میں خلل ڈالنے کے لیے انعام کی پیشکش تین افراد کو واضح کر رہی ہے جو کہ حزب اللہ کے اہم مالی معاون اور مددگار ہیں جن کے بارے میں معلومات کی تلاش ہے اور جنہیں امریکی محکمہ خزانہ نے ایس ڈی جی ٹی قرار دیا ہے:

 
Adham Husayn Tabaja

ادھم حسین تباجہ

نام:
ادھم حسین تباجہ

عُرفیات:
ادھم حسین تباجہ؛ ادھم تباجہ

تاریخ پیدائش:
24 اکتوبر، 1967

جہ پیدائش:
کفارتیب نٹ 50، لبنان

متبادل جہ پیدائش
کفارتیب نٹ، لبنان؛ گھو بیری، لبنان؛ الگھوبیرا لبنان

شہریت:
لبنانی

پاسپورٹ:
آر ایل 1294089 (لبنان)

شناختی نمبر:
00986426 (عراق)

دہشت گرد تنظیم:
لبنانی حزب اللہ

انفرادی تق0رر:
خزانچی ایس ڈی جی ٹی: 10جون، 2015

Adham Tabajaحزب اللہ کا ایک رُکن ہے جس کے تعلقات حزب اللہ کے سینئر عناصر کے ساتھ ہیں جس میں دہشت گرد تنظیم کا عملیاتی حصہ، اسلامی جہاد بھی شامل ہیں۔ تباجہ کے پاس تنظیم کی طرف سے لبنان میں جائداد بھی ہے۔ وہ لبنان میں واقع تعمیرات کرنے والی کمپنی الانما گروپ فور ٹورزم ورکس کا سب سے زیادہ حصہ رکھنے والا مالک ہے۔ Al-Inmaa Group for Tourism Works اور اس کی معاون کمپنیوں کو جون 2015 میں ایس ڈی جی ٹی قرار دیا گیا۔ سعودی عرب کی بادشاہت نے بھی Adham Tabaja اور اس کی کمپنیوں کو اپنے دہشت گرد جرائم اور مالی معاونت اور شاہی فرمان A/44 کے تحت دہشت گرد تنظیمیں قرار دیا ہے۔ سعودی عرب میں اُن کے اثاثوں کو منجمد کر دیا گیا ہے اور مُلک کے مالی نظام کے ذریعے پیسوں کی منتقلی اور اُن کے کسی بھی طرح کے تجارتی اجازت ناموں پر Tabaja پابندی عائد کر دی گئی ہے۔

  
Mohammad Ibrahim Bazzi

محمد ابراہیم بازی

نام:
محمد ابراہیم بازی

عُرفیتیں
محمد بازی؛ محمد ابراہیم بازی؛ محمد بازی

تاریخ پیدائش:
10 اگست، 1964

جائے پیدائش:
بینٹ جبیل لبنان

شہریت:
لبنانی، بیلجیم

پاسپورٹ:
EJ341406 (بیلجیم) مُدت ختم ہوئی 31 مئی، 2017؛ 750249737; 899002098 (برطانیہ); 487/2007 (لبنان); RL3400400 (لبنان); 0236370 (سیارہ لیون)); D0000687 (گیمبیا)

دہشت گرد تنظیم:
لبنانی حزب اللہ

انفرادی نام:
خزانچی ایس ڈی جی ٹی – 17 مئی، 2018

پتہ:
Adnan Al-Hakim Street, Yahala Bldg., Jnah, Lebanon; Eglantierlaan 13-15, 2020, Antwerpen, Belgium; Villa Bazzi, Dohat Al-Hoss, Lebanon

Mohammad Ibrahim Bazzi حزب اللہ کا ایک اہم مالی معاون ہے جس نے اپنے کاروباری سرگرمیوں سے کمائے گئے لاکھوں ڈالر حزب اللہ کو مہیا کیے ہیں۔ وہ Global Trading Group NV, Euro African Group LTD, Africa Middle East Investment Holding SAL, Premier Investment Group SAL Offshore, and Car Escort Services S.A.L. Off Shore.کا مالک ہے یا اُن کے اختیار میں ہے۔ بازی اور اُس کی ملحقہ کمپنیوں کو مئی 2018 میں ایس ڈی جی ٹی قرار دیا گیا۔

  
Ali Youssef Charara

علی یوسف چرارا

نام:
علی یوسف چرارا

عرفیتیں:
علی یوسف شرارا؛ علی یوسف شرارا

تاریخ پیدائش:
25 ستمبر، 1968

جہ پیدائش:
سائی ڈن، لبنان

شہریت:
لبنان

پتہ:
Ghobeiry Center, Mcharrafieh, Beirut, Lebanon; Verdun 732 Center, 17th Floor, Verdun, Rachid Karameh Street, Beirut, Lebanon; Al-Ahlam, 4th Floor, Embassies Street, Bir Hassan, Beirut, Lebanon;

دہشت گرد تنظیم:
لبنانی حزب اللہ

انفرادی نام:
خزانچی ایس ڈی جی ٹی: 7 جنوری، 2016

علی یوسف شرارہ حزب اللہ کا ایک اہم مالی معاون ہے اور لبنان میں واقع مواصلاتی کمپنی Spectrum Investment Group Holding SALکا چیر مین اور جنرل مینجر ہے۔ شرارہ کو حزب اللہ کی طرف سے لاکھوں ڈالر موصول ہوئے ہیں تا کہ وہ تجارتی کاموں میں سرمایہ کاری کر سکے جو کہ دہشت گرد تنظیم کی مدد کرتے ہیں۔ Charara اور Spectrum Investment Group کو جنوری 2016 میں ایس ڈی جی ٹی قرار دیا گیا۔

ایک اور تصویر

Lebanese Hizballah Financial Network Poster - English
Lebanese Hizballah Financial Network Poster - Arabic
Lebanese Hizballah Financial Network Poster - Farsi
Lebanese Hizballah Financial Network Poster - French
Lebanese Hizballah Financial Network Poster - Kurdish
Lebanese Hizballah Financial Network Poster - Portuguese
Lebanese Hizballah Financial Network Poster - Spanish