پروگرام کا جائزہ

آر ایف جے، سٹیٹ ڈپارٹمنٹ کا دہشت گردی سے جنگ کا انعامی پروگرام 1984 کے دہشت گردی کے خاتمے کے عوامی قانون 533-98 (جسے 22 یو ایس سی 2708) کے تحت قائم کیا گیا۔ سٹیٹ ڈپارٹمنٹ کی سفارتی سیکیورٹی کا دفتراِس کے انتظامات کرتا ہے۔ آر ایف جے کا مقصد یہ ہے کہ بین القوامی دہشت گردوں کو سزا دلائی جائے اور امریکی شہریوں اور املاک کے خلاف دہشت گرد کاروائیوں کو روکا جائے۔ اِس پروگرام کے تحت سٹیٹ کی سیکرٹری ایسی معلومات کے لیے انعام کی اجازت دی سکتی ہے جس سے کسی بھی ایسے شخص کی گرفتاری یا سزا دلانے میں مدد ملے جو امریکی شہریوں یا املاک کے خلاف بین الاقوامی دہشت گردی کی منصوبہ بندی کرے، دہشت گردی یا اِس میں مدد کرے یا ایسا کرنے کی کوشش کرے یا ایسی معلومات جس سے ایسی کاروائیوں کو روکنے میں مدد ملے یا جس سے کسی اہم دہشت گرد لیڈر کی شناخت یا جگہ معلوم کرنے میں مدد ملے یا دہشت گردی کی سرمایہ کاری کو روکنے میں مدد ملے۔

سیکرٹری آف اسٹیٹ کو یہ اختیار حاصل ہے کہ وہ 2 کروڑ 50 لاکھ ڈالر سے زیادہ کا انعام ادا کردیں اگر وہ سمجھتے ہیں کہ دہشت گردی کا مقابلہ کرنے یا دہشت گرد ی کی کارروائیوں کے خلاف امریکہ کا دفاع کرنے کے لئےاس سے زیادہ بڑی رقم کی ادائیگی ضروری ہے۔

1984 میں انعامات برائے انصاف پروگرام کے آغاز ہی سے امریکی حکومت نے 100  سے زائد لوگوں کو 150 ملین ڈالر سے زیادہ رقم ادا کی ہے جنہوں نے ایسی معلومات مہیا کی تھی جس سے دہشت گردوں کو جیل میں قید کرنے میں مدد ملی یا پوری دُنیا میں دہشت گردی کو روکنے میں مدد ملی۔ اِس پروگرام نے بین الاقوامی دہشت گرد رمزی یوسف کی گرفتاری میں اہم کردار ادا کیا جو کہ 1993 میں ورلڈ ٹریڈ سنٹر پر حملے میں ملوث تھا۔

اگر چہ انعامات برائے انصاف پروگرام پر اثر انداز قانون کا ہدف امریکی شہریوں کے خلاف ہونے والی دہشت گردی ہے، پھر بھی امریکی حکومت ان دیگر اقوام کے ساتھ معلومات کا اشتراک کرتی ہے جن کے شہریوں کو اس کا خطرہ درپیش ہے۔ دہشت گردوں کو انصاف کے کٹہرے میں لانا اور دہشت گرد کارروائیوں کو روکنا ہر حکومت اور ہر شہری کی ذمہ داری ہے۔.